عمرہ

عمرہ حج کی طرح فرض یا لازمی نہیں ہے بلکہ یہ ایک سنت عمل ہے۔

شروع میں حرام ذرائع سے روزی کمانے کی ممانعت ہے۔ لہٰذا حرام کی کمائی سے کوئی شرعی کام ادا نہیں کیا جا سکتا۔ حج،عمرہ، زکوٰۃ،خیرات، صدقہ یا فطرانہ حرام کی کمائی سے ادا کرنا قطعاً ناجائز و حرام ہے۔

کوئی شخص، ادا رہ یا حکومتی محکمہ کسی دوسرے شخص، کسی ملازم یا شہری کے لیے عمرہ کے اخراجات ادا کر سکتا ہے، ایسے عمرہ کی شرعی حیثیت ٍٍخیرات ہے۔